Geryanek (إلى أوردو ترجم)

الكردية (الكرمانجي)

Geryanek

Havîn bû çûm Şingalê
Hejîra li dem nûbarê
Min dît li wirê ciwanek
Awir dida ji alek
Min gotê: "keça kê yî?"
Torina kîj malê yî?
Tu gula kîj bexçê yî?
Nêrgîza serê kê yî?
Lawo ez Kurdistan im
Xuştivîya Kurdan im
Evîndara şêran im
Ketime dest nezanan
 
Ez geriyam çûm Amedê
Cihê pîran û befrê
Nalînake wî dihêtin
Birîndar e xwîn jê dihêtê
Min gotê: kewê kê yî?
Çima li nav befrê yî
Brîndarê destê kê yî?
Xwîndarê destê kê yî?
Ez dengê Şêx Seîd im
Ji bo Kurdistan mirîd im
Bê kes û bê xwedan im
Ketime dest neyaran
 
Çûm Mehabadê geriyam
Wek dara bîyê weryam
Darek di dest zarokan
Pêdikirin yariya bûkan
Min gotê: Tu çi dar î?
Wek rebena li vî warî
Tu li kolanan dixişandin
Ji nîvê re tu şikandin
Lawo ez dar ala bûm
Navbera çarçira bûm
Ez qibleya Kurdan bûm
Ketime dest nemerdan
 
Payîz bû çûm Rojava
Ser deşt û ber der ava
Min dît li wirê şûxek
Berda dilê min dûxek
Min gotê: Keça kê yî?
Dîlber û şenga kê yî?
Bihara dilê kê yî?
Barana kîj deştê yî?
Lawo ez Qamişlo me
Şenga warê Şêxo me
Mêvana warê xwe me
Ketime dest zordaran
 
تم نشره بواسطة GulalysGulalys في الأثنين, 19/08/2013 - 12:42
تم تعديله آخر مرة بواسطة ltlt في الأربعاء, 23/07/2014 - 06:33
إلى أوردو ترجم
Align paragraphs
A A

سفر

گرم موسم مے میں سجار چلا
ایک پرانے انجیر کے درخت کی طرح
میں نے ایک نوجوان لڑکی کو دیکھا
وہ اداس تھی
میں نے پوچھا: تم کون ہو؟
تم کس کے گھر کی بیٹی ہو؟
تم کس باغ کا پھول ہو؟
تم کس طرح کی نرگس ہو؟
-لڈکے میں كردستاني ہوں
میں کردوں کی خواہش ہوں
میں شےرو کی محبت ہوں
میں انجانو کے ہاتھوں پڑ گئی
 
میں چلا، میں دياربكي گیا
بڑوں اور برف کی جگہ میں
اس کی چیخیں آئیں
زخمی، اس کا خون بہہ رہا تھا
میں نے کہا:تم کس کا تیتر ہو؟
کیوں برف میں ہو؟
کسکے ہاتھ آپ زخمی ہو گئیں؟
کسکے ہاتھ میں تمہارا خون بہہ رہا ہے؟
- میں شیخ کی درد بھری آواز ہوں
میں کردستان کے لئے ایک مرید ہوں
میں اکیلی ہوں، سب کے بغیر
میں دشمنوں کے ہاتھوں میں گر گئی
 
میں سیر کے لئے مهباد چلا گیا
ایک درخت کی طرح، میں نے اپنے پتے کھو دۓ
بچوں کے ہاتھوں میں ایک درخت
وہ کھلونہ کی طرح مجھے کچل رہے تھے
میں نے کہا: آپ کون سا درخت ہے؟
آپ اس ملک کے غریب کی طرح ہو
انہوں نے گلیوں میں تمہیں گھسیٹ
تمہیں بیچ سے توڑ دیا
-لڈکے، میں پرچم کا درخت تھی
میں تشرتشرا کی جگہ میں تھی
میں کردوں کا کعبہ تھی
میں ڈرپوكو کے ہاتھوں میں پڑ گئی
 
موسم خزاں کا آیا، میں مغرب گیا
میدانوں اور دریاؤں کے پاس
میں نے ایک خوبصورت لڑکی کو دیکھا
میرے دل میں اس نے ایک چھڑی ڈالی
میں نے پوچھا: تم کون ہو؟
تم کس کی خوبصورتی اور خزانہ ہو؟
تم کس کے موسم بہار ہو؟
تم کس وادی کی بارش ہو؟
- لڈکے، میں قمشلي ہوں
میں شےخو کی زمین کا خزانہ ہوں
میں اپنی زمین کی مہمان ہوں
میں ظالم کے ہاتھوں پڑ گئی
 
تم نشره بواسطة Nazish_qamarNazish_qamar في الأحد, 01/11/2015 - 14:14
Added in reply to request by ononmusikononmusik
التعليقات